٭ جی ٹوئنٹی کی، بھارت کی آئندہ صدارت، عالمی بھلائی اور دنیا کی بہبود پر توجہ دینے کا ایک بڑا موقعہ ہے: وزیر اعظم نریندر مودی            ٭ جی ٹوئنٹی کے موضوع ’ایک کرئہ ارض، ایک خاندان، ایک مستقبل‘ سے بھارت کے، Vasudhaiva کٹمبکم کے عزم کا اظہار ہوتا ہے: وزیر اعظم مودی            ٭ گجرات میں پہلے مرحلے کے اسمبلی انتخابات میں سیاسی پارٹیاں ووٹروں کو لبھانے کیلئے ریاست کی مختلف جگہوں کا دورہ کر رہے ہیں            ٭ حکومت نے اگلے سال کے مرکزی بجٹ کیلئے لوگوں سے اُن کے خیالات اور تجاویز طلب کی ہیں            ٭ نائب صدر جمہوریہ جگدیپ دھنکھڑ کل ماہر دستکاروں کو شلپ گرو اور قومی انعامات سے نوازیں گے           
خبروں کی جھلکیاں

Dec 01, 2020
9:39PM

کسان احتجاج ترک کر کے بات چیت میں شامل ہوں، سرکار کی اپیل، چوتھے دور کی میٹنگ جمعرات کو۔

Tweeted by AIR
وزیر زراعت نریندر سنگھ تومر نے کہا ہے کہ مرکزی سرکار نے کسانوں کے مفادات کا تحفظ کرنے کا تہیہ کر رکھا ہے اور وہ کسانوں کی بہبود کی خاطر بات چیت کرنے کیلئے ہمیشہ تیار ہے۔ جناب تومر کے ساتھ ساتھ کامرس کے وزیر پیوش گوئل اور کامرس کے وزیر مملکت سوم پرکاش نے آج نئی دلّی کے وگیان بھون میں پنجاب کی کسان تنظیموں کے نمائندوں کے ساتھ گفتگو کی۔
اِن وزراءنے کسان یونینوں کے نمائندوں کو زرعی اصلاحات کے قوانین کے فائدوں کے بارے میں پھر جانکاری دی۔ اِس کے علاوہ زرعی اصلاحات سے متعلق قوانین سے وابستہ مختلف معاملات پر تفصیل سے تبادلہ خیال کیا گیا اور بات چیت خوشگوار ماحول میں ہوئی۔
میٹنگ کے دوران جناب تومر نے زور دے کر کہا کہ سرکار کسانوں کی بہبود کے تئیں پوری طرح پابند ہے اور زرعی ترقی ہمیشہ سرکار کی اوّلین ترجیح رہی ہے۔ میٹنگ کے دوران وزیر زراعت نے کسانوں کے معاملات پیش کرنے کیلئے ماہرین کی ایک کمیٹی تشکیل دیئے جانے کی تجویز بھی پیش کی تاکہ اِن معاملات کو باہمی رضامندی سے حل کیا جاسکے لیکن کسان یونینوں کے نمائندوں کا یہ کہنا تھا کہ سبھی نمائندے معاملے کو خوشگوار طریقے سے حل کرنے کی خاطر سرکار کے ساتھ چوتھے دور کی بات چیت کریں گے۔
آج کی میٹنگ کے دوران سرکار نے کسان یونینوں کے نمائندوں کے سامنے یہ تجویز رکھی کہ زرعی اصلاحات کے قوانین سے وابستہ مخصوص معاملات کی نشاندہی کی جائے اور غور وخوض کیلئے کل سرکار کو اِس کی جانکاری دی جائے، جس پر جمعرات کو چوتھے دور کی میٹنگ میں تبادلہ خیال کیا جائیگا۔
نئی دلّی میں کسانوں کی تنظیموں کے ساتھ میٹنگ کے بعد نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے جناب تومر نے کہا کہ سرکار نے کسانوں سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنا احتجاج ترک کردیں اور بات چیت کیلئے آگے آئیں۔ انھوں نے کہا کہ البتہ اِس فیصلے کا انحصار کسانوں اور اُن کی یونینوں پرہے۔
وزیر زراعت نے کہا کہ کسانوں کے ساتھ تیسری بار میٹنگ ہوئی ہے جو اچھی رہی۔ جناب تومر نے بتایا کہ بات چیت کا چوتھا دور جمعرات کو ہوگا۔

  لائیو ٹوئٹر فیڈ