* وزیراعظم نریندر مودی آج گجرات کے دُوارکا اور راجکوٹ میں باون ہزار کروڑ روپے سے زیادہ مالیت کے کئی ترقیاتی پروجیکٹوں کا آغاز کریں گے۔            * وزیراعظم آج آکاشوانی پر دن میں گیارہ بجے من کی بات پروگرام میں اپنے خیالات کا اظہار کریں گے۔            * وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ کواڈ چار بڑی جمہوریتوں کیلئے ایک ایسا اہم پلیٹ فارم ہے، جو کھلے اور سبھی کی شمولیت والے بھارت-بحرالکاہل خطے کو یقینی بنانا چاہتا ہے۔            * بھارت کی دفاعی برآمدات کے سال دو ہزار اٹھائیس انتیس تک پچاس ہزار کروڑ روپے تک پہنچ جانے کا امکان ہے۔            * بنگلورو میں خواتین کے پریمئر لیگ میں رائل چیلنجرس بنگلورو نے یوپی واریئرس کو دو رَن سے ہرایا۔           
خبروں کی جھلکیاں

Nov 11, 2020
3:22PM

آرمینیا اور آذربائیجان کے درمیان ناگورنو-کاراباخ کے متنازعہ علاقے سے متعلق سمجھوتہ

آرمینیا اور آذربائیجان نے ناگورنو-کاراباخ کے متنازعہ علاقے پر فوجی ٹکراﺅ کو ختم کرنے کے ایک سمجھوتے پر دستخط کئے ہیں۔ اس سے پہلے،آذربائیجان اورآرمینیائی نسل کے لوگوں کے درمیان چھ ہفتے تک لڑائی ہوتی رہی تھی ۔امن سمجھوتے پر روس کے صدر ولادیمیرپوتن، آذربائیجان کے صدر الہام علییف اور آرمینیا کے وزیراعظم نکول پشِنیان نے دستخط کئے ہیں اور یہ کل رات سے نافذ ہوگیاہے۔سمجھوتے پر عمل آوری کیلئے روس نے نگارنوکاراباخ میں فوج بھیجی ہے۔
سمجھوتے کے تحت آذربائیجان،ناگورنو-کاراباخ کے علاقے اپنے پاس رکھے گا جو اُس نے لڑائی کے دوران اپنے قبضے میں لئے تھے۔ آرمینیا نے اس بات سے بھی اتفاق کیاہے کہ وہ اگلے کچھ ہفتوں میں بہت سے دوسرے علاقوں سے بھی اپنی فوجیں ہٹالے گا۔
آرمینیا کے وزیر اعظم نے کہا کہ یہ سمجھوتہ اُن کے اور عوام کیلئے تکلیف دہ ہے۔اِس سمجھوتے کی وجہ سے آرمینیا کے لوگوں میں غصہ پیدا ہوگیا ہے۔ مظاہرین نے پارلیمنٹ میں زبردستی داخل ہوکر اسپیکر کے ساتھ مارپیٹ کی۔

  لائیو ٹوئٹر فیڈ