٭ وزیر اعظم نے ’ایک ضلع ایک پروڈکٹ‘ اسکیم کو بڑھاوا دینے اور اُمنگوں والے ضلعوں کو مزید فروغ دینے پر زور دیا            ٭ وزیر داخلہ اور بی جے پی صدر آج سے آسام کا دورہ کررہے ہیں، جہاں وہ مختلف پروگراموں میں شرکت کریں گے            ٭ لوک سبھا کے اسپیکر نے ضابطوں پر مبنی بین الاقوامی نظام کے تئیں بھارت کی حمایت کو دوہرایا            ٭ نیوزی لینڈ نے کہا ہے کہ وہ بھارت کو اپنے سب سے اہم ساجھیدار ملکوں میں سے ایک مانتا ہے            ٭ بین الاقوامی شمسی اتحاد کی پانچویں اسمبلی اس مہینے کی سترہ تاریخ سے نئی دلّی میں ہوگی           
خبروں کی جھلکیاں

Aug 15, 2022
11:40AM

ملک آج اپنا چھہترواں یوم آزادی منا رہا ہے، وزیر اعظم نے لال قلعہ کی فصیل سے قومی پرچم لہرایا اور قوم سے خطاب کیا۔

Tweeted by @AIR
 ملک آج 75 واں یوم آزادی منارہا ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی نے نئی دلی میں لال قلعے کی فصیل سے قومی پرچم لہرا کر یوم آزادی کا جشن منانے میں قوم کی قیادت کی۔ پرچم کشائی کے بعد ترنگے کو قومی سلامی دی گئی۔ قومی پرچم لہرانے اور قومی سلامی پیش کئے جانے کے دوران 20 جوانوں پر مشتمل فضائیہ کے بینڈ نے قومی ترانے کی دھن بجائی۔ قومی پرچم لہرانے کے ساتھ اعلیٰ 8 ہزار 711 فیلڈ بیٹری کے بہادر توپچیوں کے ذریعے 21 توپوں کی سلامی دی گئی۔ 
اپنے خطاب میں وزیراعظم نے کہا کہ آج کا دن نہ صرف بھارت میں بلکہ دنیا کے ہر کونے میں منایا جارہا ہے۔ ترنگا پورے فخر اور وقار کے ساتھ لہرا رہا ہے۔ اِسے ایک تاریخ دن قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ نئے عزم کے ساتھ آگے بڑھنے کا مبارک موقع ہے۔
انہوں نے مہاتما گاندھی، نیتاجی سبھاش چندر بوس، ڈاکٹر بی آر امبیڈکر اور ونایک دامودر ساورکر جیسے عظیم رہنماؤں کے تئیں اظہار تشکر کیا۔ 
انھوں نے کہا کہ قوم بھگت سنگھ، راج گرو، رام پرساد بسمل، رانی لکشمی بائی اور دیگر مجاہدین آزادی جنھوں نے برطانوی سامراج کی بنیادیں ہلادیں ہم ان کے شکر گزار ہیں۔ انھوں نے جواہر لال نہرو، رام منوہر لوہیا اور سردار ولبھ پٹیل سمیت آزاد ملک کے معماروں کو سلام پیش کیا۔
انھوں نے اس بات کو اجاگر کیا کہ بھارت سوامی وویکانند، سری اُورو بندو اور گورو دیو رابندر ناتھ ٹیگور جیسے عظیم مفکرین کی سرزمین ہے۔
انھوں نے مزید کہا کہ Birsa Munda، Tirot Singh اور Alluri Sitarama Raju، وہ آدی واسی مجاہدین آزادی ہیں، جنھوں نے ملک کے کونے کونے میں جدوجہد آزادی کو زندہ رکھنے میں مرکزی رول ادا کیا۔
جناب مودی نے کہا کہ بھارت کئی چیلنجز کے باوجود آگے بڑھا ہے کیونکہ وہ مادرِ جمہوریہ ہے۔ انہوں نے ملک کی مٹی کی طاقت وعظمت کی یاد دہانی کرائی۔
جناب مودی نے کہا کہ مساوات بھارت کی ترقی کا بنیادی پتھر ہے اور بھارت پہلے کے منتر کے ذریعے لوگوں کو متحد رہنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ خواتین کا احترام بھارت کی ترقی کا اہم ستون ہے۔ انہوں نے ناری شکتی کی حمایت کی ضرورت پر زور دیا۔ 

وزیراعظم نے کہا کہ اگلے 25 برس میں ہمیں پانچ عزائم پر توجہ مرکوز کرنی ہے۔ یہ ہیں ترقی یافتہ بھارت، غلامانہ ذہنیت کا مکمل خاتمہ، شاندار وراثت پر فخر، اتحاد اور شہریوں کے فرائض کی انجام دہی۔ انہوں نے نوجوانوں سے پرزور انداز میں کہا کہ وہ اگلے 25 برس کے لیے اپنی زندگی ملک کی ترقی کے لیے وقف کردیں۔ 
جناب مودی نے زور دیے کر کہا کہ ہمیں غلامانہ ذہنیت کی زنجیروں سے آزادی حاصل کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ کئی مرتبہ صلاحیتیں زبان کی رکاوٹ کی نذر ہوجاتی ہیں۔ انہوں نے اسے سامراجیت کی مثال قرار دیا۔
انہوں نے کہا کہ بھارت کی کثرت میں وحدت باعث فخر ہے۔ انہوں نے کہا کہ لوگوں کو بھارت پہلے کے نعرے کے ساتھ آگے بڑھنا چاہئے اور اس کی ایکتا کی ڈور کو تھامے رکھنا چاہئے۔
وزیر اعظم نے نئے بھارت کی ترقی کیلئے ملک بھر میں سب کی شمولیت کو یقینی بنانے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ یہ نظریہ مہاتما گاندھی کو عزیز تھا۔ جناب مودی نے کہا کہ گاندھی جی کے فلسفے پر عمل کرتے ہوئے حکومت ملک کے ہر گوشے میں ہر بھارتی کو بااختیار بنانے کی سمت کام کر رہی ہے، چاہے وہ دلت ہوں، خواتین ہوں، کسان ہوں یا Divyang۔ انھوں نے کہا کہ امنگوں پر مبنی معاشرہ کسی بھی ملک کیلئے اہم ہے اور اس بات پر فخر کا اظہار کیا کہ یہ امنگیں بھارت کے ہر گھر میں موجود ہیں۔ جناب مودی نے کہا کہ اس امرت کال نے امنگوں والے معاشرے کو اپنے خوابوں اور مقاصد کو پورا کرنے کیلئے سنہرا موقع فراہم کیا ہے۔ انھوں نے اِس بات پر بھی فخر کا اظہار کیا کہ ملک سے محبت کی خاطر عام شعور میں اضافہ ہوا ہے۔
انھوں نے کہا کہ ہر گھر ترنگا، اس عظیم الشان ملک کے جذبے کو منانے کی خاطر پورے ملک کے متحد ہونے کی ایک بہترین مثال ہے۔
جناب مودی نے کہا کہ کووڈ-اُنیس کے خلاف لڑائی عام بیداری کی ایک مثال رہی ہے جس میں سبھی شہری مل کر ساتھ آئے۔ انھوں نے کہا کہ تحقیق کئے جانے میں ڈاکٹروں کی مدد کیلئے ملک ایک ساتھ کھڑا رہا تاکہ دور دراز کے حصوں تک ویکسین پہنچائی جاسکے۔ انھوں نے کہا کہ دنیا اب فخر اور امید کے ساتھ مسائل کے حل کرنے کے طور پر بھارت کو دیکھ رہی ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ دنیا بھارت کو ایک ایسے مقام کے طور پر دیکھ رہی ہے جہاں اُمنگیں تکمیل کو پہنچ رہی ہیں۔
انھوں نے کہا کہ سب کا ساتھ، سب کا وِکاس، سب کا وشواس اور سب کا پریاس، اہم حصہ بن گئے ہیں تاکہ ملک نواز پالیسیوں کے نفاذ اور ہر شخص تک ترقی کے فوائد پہنچائے جانے کو یقینی بنایا جاسکے۔

  لائیو ٹوئٹر فیڈ